ملک بھر میں آج یوم عاشور عقیدت و احترام سے منایاجارہا ہے

 اسلام آباد (ڈی این ڈی) ملک بھر میں آج یوم عاشور عقیدت و احترام سے منایاجارہا ہے اس سلسلے میں سیکیورٹی کے پیش نظر مختلف شہروں میں موبائل فون سروس معطل اور ڈبل سواری پر پابندی لگا دی گئی ھے۔ملک بھر سے تمام شہروں کے جلوس اپنے روایتی راستوں سے برآمد ہوکر اپنے مقررہ مقام پر اختتام پذیر ہونگے، جلوسوں کی سی سی ٹی وی کیمروں سے مانیٹرنگ کی جارہی ہے اور حساس مقامات پر ہیلی کاپٹرز کے ذریعے جلوسوں کی فضائی نگرانی بھی کی جا رہی ھے۔وزارت داخلہ میں خصوصی مانیٹرنگ سیل قائم کر دیا گیا جو پورے ملک میں سیکیورٹی صورتحال کو مانیٹر کرے گا، جلوس کے راستوں میں بغیر اجازت پانی اور دودھ کی سبیلیں لگانے اور نیاز تقسیم کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ سندھ میں 10 محرم الحرام کو بھی صوبے بھر میں موبائل فون سروس صبح 8 بجے سے رات 12 بجے تک معطل رکھی جائے گی۔ترجمان وزیر داخلہ سندھ کے مطابق صوبے بھر میں 4 ہزار 281 ماتمی جلوس برآمد ہونگے اور 14 ہزار 563 مجالس منعقد کی جائیں گی ۔کراچی میں محرم الحرام کا مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد ہو کر روایتی راستوں پر رواں دواں ہے جو حسینیاں ایرانیاں امام بارگاہ کھارادر پر اختتام پذیر ہوگا۔مرکزی جلوسوں کی مانیٹرنگ کیلئے تین کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر قائم کئے گئے ہیں، جہاں سی سی ٹی وی کیمروں سے چار سو تہتر مقامات کی مانیٹرنگ کی جا رہی ہے۔
محکمہ داخلہ پنجاب نے لاہور اور راولپنڈی سمیت 10 اضلاع کو انتہائی حساس قرار دیتے ہوئے ان اضلاع میں سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کر رکھے ہیں۔لاہور میں نثار حویلی سے برآمد ہونے والا جلوس اپنے روایتی راستوں پر رواں دواں ہے جو مقررہ مقام پر اختتام پذیر ہوگا۔ جلوس کی گزرگاہوں کی اطراف سڑکوں کو کنٹینرز لگا کر بند کردیا گیا ہے۔
بلوچستان میں کوئٹہ سمیت مختلف شہروں میں ماتمی جلوس نکالے جارہے ہیں، ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کے مطابق شہر میں یوم عاشور پر پولیس کے 6 ہزار اہلکار فرائض انجام دے رہے ہیں جب کہ حساس مقامات پر پولیس کے علاوہ ایف سی اہلکار بھی تعینات ہیں۔ڈی آئی جی کوئٹہ کے مطابق شہر کے مختلف علاقوں میں 50 سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے گئے ہیں جب کہ محرم کے جلوسوں کی فضائی نگرانی کی جا رہی ھے۔صوبہ خیبر پختونخوا میں بھی سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں، سی سی پی او کے مطابق پشاور میں تقریبا 120 ماتمی جلوس اور 300 سے زیادہ مجالس کا انعقاد کیا جائے گا۔سی سی پی او کے مطابق محرم الحرام میں دہشت گردی کا خطرہ موجود ہے جس کے پیش نظر فاٹا کے ساتھ سرحد پر پولیس تعینات کی جائے گی۔ پشاور میں دسویں محرم الحرام کا مرکزی جلوس امام بارگاہ حسینہ ہال سے برآمد ہوگیا جو روایتی راستوں سے ہوتا ہوا مقررہ مقام پر اختتام پذیر ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *