پاکستان مسلم لیگ (ن) کی این اے 120میں ضمنی الیکشن کے لئے انتخابی مہم ٓکے سلسلہ میں مشاورت اورتجاویز پر غور

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی این اے 120میں ضمنی الیکشن کے لئے انتخابی مہم ٓکے سلسلہ میں مشاورت اورتجاویز پر غور
لاہور (ڈی این ڈی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کا محمد پرویز ملک کی سربراہی میں مشاورتی اجلاس،پارٹی قائد میاں نواز شریف کو خراج تحسین اور ان کے ساتھ یکجہتی کا اظہار اوراین اے 120میں ضمنی الیکشن کے لئے انتخابی مہم کے سلسلہ میں مشاورت اورمختلف تجاویز پر غورکیا گیا۔
اجلاس میں لارڈ میئر لاہورکرنل(ر) مبشرجاوید ،سید توصیف شاہ،ممبران قومی و صوبائی اسمبلی مہر اشتیاق،میاںں مرغوب،چوہدری شہباز، رمضان صدیق بھٹی،ماجد ظہور،انجم بٹ،شاہد نذیر،سہیل بٹ،وقاص صدیقی، عامر خان،تنویر ضیاء بٹ، رانا احسن شرافت،جاوید اقبال،و عہدیداروں ی بھر پور شرکت۔اجلاس میں لاہور کے صدر محمد پرویز ملک نے میاں نواز شریف کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ محمد نواز شریف کا دل پاکستان کے عوام کی محبت سے سرشار ہے ،انکے دل میں پاکستان کی تڑپ اور عوام کے مسائل کا درد ہے،نواز شریف کی قیادت میں جس قدر ترقیاتی کام کئے گئے ان کا محور عام آدمی کی بھلائی اور خوشحالی ہے اور مسلم لیگ (ن) نے پاکستان کا مستقبل روشن کرنے کیلئے دن رات ایک کیا ہوا ہے۔مسلم لیگ (ن) نے گزشتہ 4 برس کے دوران عوامی خدمت کی مثال قائم کی ہے اور عوامی فلاح اور ملکی ترقی ہمارا ایجنڈا ہے، محمد نواز شریف عوام کے دلوں میں بستے ہیں اور ان کی قومی خدمات ناقابل فراموش ہیں جن پر ہمیں فخر ہے۔ انہوں نے کہا کہ محمد نواز شریف کی قیادت میں ترقی کے وہ اہداف حاصل کئے ہیں جن کی ملک کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی اور مسلم لیگ(ن) کے دور میں پاکستان کو اقتصادی دیوالیہ پن سے نکال کر ترقی کی شاہراہ پر گامزن کیا گیا ہے۔ محمد نواز شریف تعمیری سوچ اور ترقیاتی نظریے کا دوسرانام ہے۔ ترقیاتی منصوبوں کو جاری رکھا جائے گا اور انشاء اللہ 18کروڑ عوام نواز شریف کو پھربھاری اکثریت سے وزیر اعظم منتخب کریگی

جنرل ہسپتال کی نرسز کو 9ہزار روپے ماہانہ پروفیشنل الاؤنس کی ادائیگی کا آغاز

لاہور( ڈی این ڈی) وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایات کی روشنی میں لاہور جنرل ہسپتال میں تعینات تمام نرسز کی تنخواہوں میں9ہزار روپے ماہانہ پرفیشنل الاؤنس شامل کر دیا گیا ہے جس کی ادائیگی یکم اگست کو جولائی کی ادا ہونے والی تنخواہوں میں کی جا رہی ہے۔
پرنسپل پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹیٹیوٹ پروفیسر ڈاکٹر غیاث النبی طیب نے مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ میڈیکل کے شعبے کیلئے نرسز ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہیں اور وقت کے ساتھ ساتھ یہ شعبہ ترقی کر چکا ہے اور اب ماسٹر ڈگری رکھنے والی اعلیٰ پروفیشنل اہلیت کی حامل نرسز خدمات سر انجام دے رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے نرسنگ ڈیپارٹمنٹ کی اپ گریڈیشن کیلئے خاطر خواہ کام کیا ہے اور بالخصوص 9ہزار روپے ماہانہ پروفیشنل الاؤنس کی ادائیگی اہم سنگ میل ہے جس سے سینکڑوں خاندان کو معاشی سپورٹ حاصل ہو گی پروفیسر غیاث النبی طیب نے کہا کہ معاشی طور پر مستحکم افراد زیادہ بہتر پرفارمنس دے سکتے ہیں اور یہ اقدام نرسز کیلئے خوش آئند ثابت ہو گا ۔ایل جی ایچ کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر غلام صابر نے بھی نرسوں کو ماہانہ 9ہزار روپے پروفیشنل الاؤنس کی فراہمی پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ اب یہ شعبہ مزید بہتر نتائج سامنے لائے گا ۔
اس موقع پر مختلف نرسز مس ارم ، عظمیٰ،گلشن ،خالدہ اور ندرہت نے اپنے پیغام میں شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ گرمی ،سردی ،بارش اور دھوپ میں نرسیں ڈاکٹروں کے شانہ بشانہ دکھی انسانیت کی خدمت کیلئے کام کرتی ہیں انہوں نے پروفیشنل الاؤنس کی ادائیگی پر پنجاب حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اپنی طرف سے مزید تعاون اور خدمات کو بہتر بنانے کا یقین دلایا۔

سپریم کورٹ آف پاکستان کے پانچوں جج صاحبان کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں: ناہید خان

اسلام آباد ( ڈی این ڈی )۔ پاکستان پیپلزپارٹی ورکرز کی صدر ناہید خان، سردار علی عباسی و دیگر قائدین نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم سپریم کورٹ آف پاکستان کے پانچوں جج صاحبان کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں اور ان کی جرات کو سلام پیش کرتے ہیں کہ پاکستان کی ستر سالہ سیاسی تاریخ میں کسی موجودہ وزیراعظم کو احتسابی عمل سے گزرنا پڑا۔ اسی کے ساتھ ہی جے آئی ٹی کے چھ ممبران کی جرات اور کام کو تحسین کی نظر سے دیکھتے ہیں جنہوں نے بلاخوف و خطر وزیراعظم اور ان کے خاندان کے خلاف شفاف تحقیقات کر کے اپنی رپورٹ سپریم کورٹ آف پاکستان کو پیش کی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنی تاریخ کے نازک ترین موڑ پر کھڑا ہے، بڑھتا ہوا معاشی بحران، قرضوں کا انبار بڑھتے ہوئے اندرونی اور بیرونی خطرات، وفاق پر بڑھتا ہوا دباؤ، بگڑے ہوئے سول ملٹری تعلقات، مذہبی جنونیت اور دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات، بیروزگاری، لوڈشیڈنگ، صحت اور تعلیم کی سہولتوں کا فقدان اس موقع پر ہمیں سمجھنا چاہئے کہ معاشی استحکام ہی ملک کے استحکام کا ضامن ہے۔ انہوں نے کہا کہ حقیقی طور پر رشوت ستانی نے پاکستانی معاشرے کو تباہی کے دہانے پر کھڑا کر دیا ہے۔ پاکستان بننے کے بعد ہی رشوت ستانی ایک کینسر کی طرح معاشرے میں پھیلتی چلی گئی اور عوامی عہدوں کو ذاتی منصف کیلئے استعمال کیا گیا اور 1985 کے غیر جماعتی انتخابات کے بعد یہ معاشرتی زندگی کا مستقل حصہ بنتی چلی گئی۔ انتہا درجے کی رشوت ستانی نے پاکستان کے معاشرتی سسٹم اور اخلاقی قدروں کو پستی کی طرف دھکیل دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اقتدار پر قابض چند بااثر لوگ اور احتساب کا دوہرا نظام رشوت ستانی کو فروغ دے رہا ہے اور یہ بااثر لوگ قانون کی پکڑ کر بچ نکلنے میں کامیاب ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری کامیابی اسی صورت میں ہو سکتی ہے کہ ہم اپنے طرز حکمرانی میں اصلاحات لائیں اور بلاتفریق احتسابی نظام قائم کریں جس میں تمام سیاسی جماعتوں سے تعلق کھنے والے حکمران، نوکر شاہی، عدلیہ اور مسلح افواج کے لوگ شامل ہوں۔ انہوں نے کہا کہ احتساب کے عمل کو شفاف بنانے کیلئے ضروری ہے کہ سپریم کورٹ کے حکم کے بعد ضروری ہے کہ دیگر سیاسی جماعتوں خصوصاً زرداری پارٹی اور تحریک انصاف کے اندر بیٹھے ہوئے ان لوگوں جن پر رشوت ستانی کے الزامات ہیں کارروائی کو آگے بڑھایا جائے، سپریم جوڈیشل کونسل فوری طور پر ان جج حضرات کیخلاف کارروائی کرے جن پر مختلف الزامات ہیں، وہ افسران جو مختلف محکموں میں جن میں ایف بی آر، ایف آئی اے، نیب، ایس بی پی، ایس ای سی پی شامل ہیں اور رشوت ستانی کے زمرے میں آتے ہیں ان کے خلاف کارووائی کو تیز کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جنرل راحیل شریف کے مسلح افواج کے اندر احتساب عمل کو خوش آئند سمجھتے ہوئے مسلح افواج کی موجودہ قیادت سے بھی یہ توقع رکھتے ہیں کہ وہ اپنے ادارتی عمل کے ذریعے اس عمل کو جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی ورکرز نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ پارٹی این اے 120 کے ضمنی انتخابات میں حصہ لے گی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب اور خصوصاً لاہور کا ووٹ بینک مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کی میراث نہیں، بینظیر بھٹو کی سیاسی وژن کے مطابق ایک حقیقی سیاسی ورکر کو سامنے لایا جائے۔ یہ اس لئے بھی ضروری ہے کہ زرداری پارٹی نے پنجاب اور لاہور کی سیاسی کو خیرباد کہہ دیا ہے۔ یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد، صوبائی دارالحکومتوں اور تمام ڈویژنل ہیڈکوارٹر پر عوامی مسائل خصوصاً رشوت ستانی، بیروزگاری، تعلیم اور صحت کے مسائل اور سیاسی جماعتوں میں نظریاتی اور جمہوری عمل کو جاری کرنے کیلئے احتجاجی کیمپ لگائے جائیں گے۔

اینکر پرسن غریدہ فاروقی نے کمسن گھریلو ملازمہ کو حبس بے جا میں رکھا .والدین کی عدالت میں درخواست

 پاکستانی اینکر پرسن غریدہ فاروقی نے کمسن گھریلو ملازمہ کو حبس بے جا میں رکھ کر تشدد کا نشانہ بنا دیا .والدین نے عدالت میں درخواست دی تو کئی ماہ سے حبس بے جا میں رکھی گئی گھریلو ملازمہ کو بازیاب کرا لیا گیا .

نجی نیوز چینل اے آر وائے نیوز کے مطابق لاہور کی مقامی عدالت میں محمد منیر نامی شہری نے درخواست دائر کی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ اس کی 15سالہ بیٹی سونیا اینکر پرسن غریدہ فاروقی کے گھر میں کام کرتی ہے ،گزشتہ کئی ماہ سے اسے بیٹی سے ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ تین ماہ سے تنخواہ بھی نہیں دی جا رہی ،خدشہ ہے کہ بیٹی کی جان کو خطر ہ ہے ،عدالت بیٹی کو بازیاب کرائے .

اس درخواست پر آج عدالت نے سماعت کر کے بچی کو بازیاب کرایا اور اسے والدین کے حوالے کردیا .اے آر وائے نیوز غریدہ فاروقی اور ملازمہ کی والدہ کی مبینہ کال ریکارڈنگ بھی منظر عام پر لے آیا

غیر مستند ٹیلیفون گفتگو

اس میں غریدہ فاروقی نے کہا کہ تمہیں آخری بار کہہ رہی ہوں یہاں سے چلی جاﺅ ،بچی کی والدہ نے کہا کہ آپ نے میری بچی پر تشدد کیا تھا ،مجھے اس سے ملنے دیں .اس پر اینکر پرسن نے کہا کہ اس بات کا ثبوت ہے کہ میں نے سونیا کو مارا تھا ،کسی ہسپتال میں جا کر ثبوت لے کر آﺅ

  نجی نیوز چینل اے آر وائے نشر ٹیلیفون گفتگو

.

انہوں نے دھمکی آمیز لہجے میں بچی کی والدہ کو کہا کہ تم جھوٹ بول رہی ہوں،میں تمہیں بتاﺅں گی کہ جھوٹ بولنے پر کیا سزا ملتی ہے ،میرے 40ہزا ر اس لڑکی پر لگے ہوئے ہیں ،مجھے پیسے واپس کردو اور اسے لے جاﺅ

.

اخلاقی تربیت کے ذریعے قیدیوں کو معاشرے کا کارآمد حصہ بھی بنایا جا سکے ,صدر مملکت ممنون حسین

جیلوں کے نظام میں اصلاح ناگزیر ہے، اخلاقی تربیت کے ذریعے جیلوں میں بند قیدیوں کو معاشرے کا کارآمد حصہ بھی بنایا جا سکے گا۔ صدر مملکت ممنون حسین کا تقریب سے خطاب
اسلام آباد۔ 12 جولائی (ڈی این ڈی) حکومتی خبر رساں ادارے اے پی پی کی خبر کے مطابق صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ قیدیوں کی بہتری کے لئے اخلاقی و ذہنی تربیت کے ذریعے نہ صرف جرائم پر قابو پانا ممکن ہو جائے گا بلکہ جیلوں میں بند قیدیوں کو معاشرے کا کارآمد حصہ بھی بنایا جا سکے گا، اس پس منظر میں جیلوں کے نظام میں اصلاح ناگزیر ہے۔ یہ بات انہوں نے بدھ کو وفاقی محتسب سیکرٹریٹ کے زیرِاہتمام جیلوں میں اصلاح کے لئے مرتب کی گئی رپورٹ پیش کرنے کے موقع پر کہی۔ اس موقع پر وفاقی محتسب محمد سلمان فاروقی کے علاوہ ممتاز شہریوں، ماہرین تعلیم و صحت اور دیگر لوگوں کی بڑی تعداد موجود تھی جبکہ مخیر حضرات نے جیلوں میں اصلاحات اور قیدیوں کو سہولتیں فراہم کرنے کے لئے عطیات کا بھی اعلان کیا۔ صدر مملکت نے اس موقع پر کہا کہ اسلامی تعلیمات کی روشنی میں ہی جدید دنیا میں قید و بند کے مقاصد میں اصلاحات ہوئیں اور قید خانے کو مرکز اصلاحات کے طور پر متعارف کرایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ سزائے قید کا مقصد ہی یہ ہے کہ جو ملزم یا مجرم ایک دفعہ جیل پہنچ جائے، اچھے سلوک اور اچھی تربیت کے ذریعے اس کی زندگی کا مقصد تبدیل ہو جائے۔

عوام کو حفظان صحت کے اصولوں سے روشناس کرکے لوگوں کو مہلک امراض سے بچایا جا سکتا ہے,صدر مملکت ممنون حسین

عوام کو حفظان صحت کے اصولوں سے روشناس کرکے لوگوں کو مہلک امراض سے بچایا جا سکتا ہے
صدر مملکت ممنون حسین کی ورلڈ فیڈریشن آف نیورولوجی کے چیئرمین ڈاکٹر واسع شاکر سے ملاقات میں گفتگو

اسلام آباد۔ 12 جولائی (اے پی پی) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ عوام کو حفظان صحت کے اصولوں سے روشناس کرکے لوگوں کو مہلک امراض سے بچایا جا سکتا ہے، اس سلسلہ میں متعلقہ سرکاری ادارے اور طبی انجمنیں اہم کردار ادا کر سکتی ہیں۔ انہوں نے یہ بات ورلڈ فیڈریشن آف نیورولوجی کے چیئرمین ڈاکٹر واسع شاکر سے بات چیت کرتے ہوئے کہی جنہوں نے بدھ کو ایوان صدر میں ان سے ملاقات کی۔ صدر مملکت نے کہا کہ عوام کو حفظان صحت کے اصولوں سے آگاہ کرنے کیلئے معاشرے کے تمام ذمہ دار اداروں کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے، اس سلسلہ میں ڈاکٹروں کی پیشہ وارانہ تنظیموں کے تعاون سے آگاہی کی مہمات چلائی جائیں۔ انہوں نے فالج کے مریضوں کی تعداد میں تیزی سے ہونے والے اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس صورتحال پر قابو پانے کیلئے ضروری ہے کہ سرکاری اور نجی شعبہ کی کوششوں کو مربوط کیا جائے تاکہ کم وسائل میں زیادہ سے زیادہ فائدہ حاصل کیا جا سکے۔ انہوں نے 22 جولائی ’’فالج سے بچنے کا عالمی دن‘‘ منانے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سے فالج جیسے امراض کے خلاف عوامی شعور میں اضافہ ہو گا

پارلیمنٹ کی پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس (کل) جمعرات کو پارلیمنٹ ہاوس میں ہوگا

اسلام آباد۔ 12 جولائی (ڈی این ڈی) حکومتی خبر رساں ادارے اے پی پی کی خبر کے مطابق پارلیمنٹ کی پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس (کل) جمعرات کو پارلیمنٹ ہاوس میں ہوگا۔ اجلاس کی صدارت پی اے سی کے چیئرمین سید خورشید احمد شاہ کریں گے۔ اجلاس میں وزارت دفاعی پیداوار اور وزارت ہاوسنگ و تعمیرات کے 2013۔14ء کے آڈٹ اعتراضات کا جائزہ لیا جائے گا۔ اجلاس صبح 11 بجے پارلیمنٹ ہاوس میں منعقد ہوگا

مسلم لیگ (ن) کسی بھی امتیازی سلوک کے بغیر شفاف احتساب چاہتی ہے,ڈاکٹر طارق فضل چوہدری

اسلام آباد۔ 12 جولائی (ڈی این ڈی) حکومتی خبر رساں ادارے اے پی پی کی خبر کے مطابق وزیر مملکت برائے کیڈ ڈاکٹر طارق فضل چوہدری نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کسی بھی امتیازی سلوک کے بغیر شفاف احتساب چاہتی ہے۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی رپورٹ متعصبانہ ہے، اس لئے پاکستان مسلم لیگ (ن) اسے چیلنج کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی قیادت آئین و قانون کی بالادستی کے ساتھ ساتھ منصفانہ و شفاف احتساب پر یقین رکھتی ہے اور یہی وجہ ہے کہ ہماری قیادت تمام تر تحفظات کے باوجود خود کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے خلاف ایک کیس درج ہے جس کا جواب الیکشن کمیشن میں جمع کرانے سے وہ گزشتہ 3 سال سے گریزاں ہیں