وزیراعظم محمد نواز شریف کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس بدھ کومنعقد ہوا

اسلام آباد۔ 31 مئی (ڈی این ڈی) حکومتی خبر رساں ادارے اے پی پی کی خبر کے مطابق وزیراعظم محمد نواز شریف کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس بدھ کو یہاں منعقد ہوا۔ وزیراعظم کے میڈیا آفس کی طرف سے جاری بیان کے مطابق اجلاس میں وزیر دفاع خواجہ محمد آصف، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وزیراعظم کے مشیر برائے خارجہ امور سرتاج عزیز، وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات، چیف آف آرمی سٹاف جنر قمر جاوید باجوہ، پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل محمد ذکاءاﷲ، پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل سہیل امان، قومی سلامتی کے مشیر لیفٹیننٹ جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ، ڈائریکٹر جنرل آئی ایس آئی نوید مختار، ڈائریکٹر جنرل ایف ڈبلیو او لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل، وزیراعظم کے سیکریٹری اور نیشنل سیکورٹی ڈویڑن کے سیکریٹری نے اجلاس میں شرکت کیpm-nawaz

حسین اور حسن نواز آج سپریم کورٹ کے حکم پر پاناما معاملے کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوں گے

اسلام آباد(ڈی این ڈی) وزیر اعظم کے دونوں بیٹے حسین اور حسن نواز آج سپریم کورٹ کے حکم پر پاناما معاملے کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوں گے۔گزشتہ روز پاناما کیس کی جے آئی ٹی نے وزیر اعظم کے بڑے صاحبزادے حسین نواز 5 گھنٹے سے زائد پوچھ گچھ کی تھی۔ پاناما کا ہنگامہ ، وزیر اعظم کے صاحبزادے حسین نواز کی جے آئی ٹی نے آج دوبارہ طلب کر لیا ، گزشتہ روز انہیں وکیل ساتھ رکھنے کی اجازت نہ ملی ، چھ گھنٹے تک سوالات کے جوابات دیئے۔جے آئی ٹی کے ارکان نے مسلسل6گھنٹے تک ان سے سوالات کئے ،مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سوالات کے جواب دینے کے بعد انہوں نے اپنا بیان قلمبند کرایا، سپریم جوڈیشل اکیڈمی سے روانگی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حسین نواز نے کہا کہ ہمارے ہاتھ صاف ہیں اور جو جو سوالات جے آئی ٹی نے پوچھے ان کے جوابات دے دئیے ہیں، تمام دستاویزات بھی فراہم کردی گئی ہیں۔ میرے والد یا مجھ پر کوئی غلط چیز ہم پرثابت نہیں ہو سکے گی، ہم قانون کا احترام کرنے والے لوگ ہیں ، یہ قانون کا احترام ہی ہے کہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو رہا ہوں ، جے آئی ٹی جب جب بلائے گی تو میں حاضر ہوں گاحسین نواز کو جے آئی ٹی سے بھی اپنی اور والد کی بیگناہی ثابت ہونے کا سو فیصد یقین ہے۔ حسین نواز کا کہنا تھا کہ ہر سوال کا جواب دیا ، آئندہ بلایا گیا تو بھی پیش ہو جاؤں گا تاہم انہوں نے جے آئی ٹی کے رویہ کو نامناسب قرار دیا۔ وزیر اعظم کے صاحبزادے نے کہا کہ وہ قانونی حق سے ہٹ کر کوئی دستاویز پیش نہیں کریں گے ، سب کو قانونی عمل کا احترام کرنا چاہیے حسین نواز آج بھی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے روبرو پیش ہوں گے اوران کے ہمراہ ان کے چھوٹے بھائی حسن نواز بھی ہوں گے۔ حسن نواز گزشتہ روز لندن سے اسلام آباد پہنچے ہیں۔دوسری جانب پاناما جے آئی ٹی کے دفترکے باہرسکیورٹی انتہائی سخت کردی گئی ہے۔ گزشتہ روز حسین نوازکی آمد پر مسلم لیگ (ن) کے درجنوں کارکن جوڈیشل اکیڈمی میں داخل ہوگئے تھے اور ناقص سکیورٹی کی وجہ سے کل اسسٹنٹ کمشنر کو بلانا پڑا تھا، جس کے بعد آج فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی جانے والا مرکزی راستہ بند کردیا گیا ہے تاہم فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی جانے کیلئے بیت المال کے دفتر والا راستہ کھلا ہے۔nawaz hasan husaan

وزیراعظم محمد نواز شریف سے جنرل زبیر محمود حیات کی ملاقات

اسلام آبا د (ڈی این ڈی)وزیراعظم محمد نواز شریف سے چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات نے اسلام آباد میں ملاقات کی۔ملاقات میں دفاع اور سلامتی سے متعلق امور زیر غورآئے۔ سٹرٹیجک اور مسلح افواج کی آپریشنل تیاریوں سے متعلق امور پر بھی ملاقات میں تبادلہ خیال کیا گیا۔nawaz geral zubar

وزیراعظم محمد نواز شریف کی زیر صدارت کابینہ کمیٹی کا اجلاس

اسلام آباد (ڈی این ڈی) وزیراعظم محمدنوازشریف نے آ ئندہ تین سال کے لیے بجلی کی ممکنہ طلب،موجودہ اور زیرتعمیر منصوبوں سے متوقع پیداوار کے بارے میں درست اعدادوشماراکھٹے کرنے کی ہدایت کی ہے۔اسلام آباد میں توانائی کے بارے میں کابینہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج کا اجلاس توانائی کمیٹی کے کل کے اجلاس کا تسلسل ہے جس کا مقصد لوڈ شیڈنگ میں کمی کیلئے فوری اقدامات کرناہے۔ وفاقی سیکریٹری پانی وبجلی نے اجلاس کو بتایا کہ اس وقت بجلی کی پیداوار اورموثر استعمال کو یقینی بنانے کیلئے جامع اقدامات کئیگئے ہیں۔وزیراعظم محمد نواز شریف نے تیسرے فریق کے ذریعے گردشی قرضے کی دوبارہ توثیق کرنے کی بھی ہدایت کی تاکہ ایندھن کی مد میں ادائیگیوں، لائن لاسز اور دیگر امور کا تعین کیا جاسکے۔ وزیراعظم نے توانائی کے شعبے سے متعلق اہم معاملات پر فیصلہ سازی کے عمل میں صوبائی نمائندوں کی شمولیت پر زور دیاmeeting nawaz

حسین نواز شریف جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کے سامنے ایک بار پھر حاضر ہوگئے ہیں

اسلام آباد (ڈی این ڈی) وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز شریف پاناما کیس کی تحقیقات کیلئے قائم کی گئی جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کے سامنے ایک بار پھر حاضر ہوگئے ہیں۔
حسین نواز شریف کو پاناما کیس ، غیر ملکی اثاثوں کی تفصیلات کے حوالے سے طلب کیا گیا تھا۔ حسین نواز شریف گزشتہ روز بھی جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے تھے اور ان کی جانب سے پوچھے گئے سوالوں کے جواب دیئے تھے۔حسین نواز شریف نے گزشتہ روز جے آئی ٹی کے ایک رکن کی پاکستان تحریک سے سیاسی وابستگیوں پر تحفظات کا اظہار کیا تھا اور بیان دیا تھا کہ انہیں اس رکن کی جے آئی ٹی میں شمولیت کے حوالے سے تحفظات ہیں اور ان کی موجودگی میں کیسز کا فیصلہ شفاف انداز میں آنا یقینی نہیں۔ وزیراعظم کیصاحبزادے حسین نوازکوآج جے آ ئی ٹی نے طلب کررکھا تھا۔ 6 ارکان پر مشتمل جے آئی ٹی نے28مئی کو انہیں اپنی کمپنیوں اور پراپرٹیزکاریکارڈ ساتھ لانے کی ہدایت کی تھی۔نیشنل بینک کے صدر سعید احمد بھی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے ہیں۔اس موقع پرمسلم لیگ ن کیکارکنان بھی بڑی تعداد میں فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی کے باہرموجودتھی۔آصف کرمانی کا کہنا ہے کہ حسین نوازتمام کاغذات لے کرآئے ہیں۔وہ تمام سوالات کے جواب دیں گے۔جن ممبران پرتحفظات ہیں انکواس تحقیقات سیخود کوعلیحدہ کرلینا چاہیے تھا۔ہم نے اپنے تحفظات عدالت کے سامنے پیش کردیے ہیں۔واضح رہے کہ وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز نے پاناما کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے دو ارکان پر عتراضات اٹھائے تھے، حسین نواز کا اعتراض تھا کہ ایس ای سی پی کے نمائندے بلال رسول کی سیاسی وابستگیاں ہیں۔سپریم کورٹ نیگذشتہ روز حسین نواز کے اعتراضات مسترد کرتے ہوئے پاناما کیس میں جے آئی ٹی کو کام جاری رکھنے کی ہدایت کی تھی۔دوران سماعت جسٹس اعجاز افضل نے ریمارکس دیئے کہ کسی ٹھوس ثبوت کے بغیر جے آئی ٹی کا کوئی رکن تبدیل نہیں ہو گا۔ شکوک کی بنیاد پر کسی کو جے آئی ٹی ٹیم سے نہیں نکالا جاسکتا، اگر ایسا کیا تو پھر تحقیقات کیلئے آسمان سے فرشتے بلانے پڑیں گے۔ عدالت نے کہاکہ حماد بن جاسم پیش نہ ہوئے تو قطری خط ردی ہوجائیگا۔husaan nawaz

ملک کے بیشتر میدانی علاقوں میں موسم شدید گرم اور خشک رہنے کا امکان ہے۔ محکمہ موسمیات ,

اسلام آباد۔ 30 مئی (ڈی این ڈی) حکومتی خبر رساں ادارے اے پی پی کی خبر کے مطابق محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ 24گھنٹوں کے دوران ملک کے بیشتر میدانی علاقوں میں موسم شدید گرم اور خشک رہنے جبکہ مالاکنڈ، ہزارہ، راولپنڈی، گوجرانوالہ، لاہور ڈویڑن، اسلام آباد، بالائی فاٹا اور کشمیر میں بعض مقامات پر تیز ہواوں/آندھی اور گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان ہے۔ رپورٹ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم شدید گرم اور خشک رہا ہے۔weather forcast

 

عمران خان عدالتوں کے مفرور ہیں ,دانیال عزیز

اسلام آباد۔ 30 مئی (ڈی این ڈی) حکومتی خبر رساں ادارے اے پی پی کی خبر کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے رہنما دانیال عزیز نے کہا ہے کہ عمران خان کر عدالے کی جانب سے پیش ہونے کا آخری موقع دیا گیا اور وہ پیش نہیں ہوئے،عمران خان نے پاکستان کو جتنا نقصان پہنچایا اس کی مثال نہیں ملتی،وہ عدالتوں کے مفرور ہیں۔ الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ انھوں نے کہا کہ آج جب عدالتوں سے یہ آواز بلند ہو تی ہے کہ عمراں خان ولد اکرام اللہ نیازی پیش ہو تو وہ پیش نہیں ہوتے وہ مفرور ہیں، عمران خان 788 کے اشتہاری ہونے کے باوجود آزاد پھر رہے ہیں۔danyal

شہر تربت میں درجہ حرارت 53.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو کہ علاقے کی تاریخ کا بلند ترین درجہ تھا

بلوچستان(ڈی این ڈی) پاکستان میں گذشتہ کچھ روز سے جاری گرمی کی شدید لہر نے شہریوں کو مشکلات سے دوچار کر رکھا ہے۔گزشتہ روز صوبہ بلوچستان کے شہر تربت میں درجہ حرارت 53.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو کہ علاقے کی تاریخ کا بلند ترین درجہ تھا۔خیال رہے کہ اس سے قبل تربت میں 30 مئی 2009 کو درجہ حرارت 52 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا تھا۔محکمہ موسمیات نے ملک کے بیشتر علاقوں میںآئندہ چند روز تک موسم خشک اور گرم رہنے کا امکان ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان ، موسمی تبدیلیوں کے زیرِ اثر ہے، حالیہ چند برسوں سے ملک بھر گرمی کی شدت میں اضافہ ہوا ہے۔خاص کر صوبہ پنجاب اور سندھ میں گرمی کی شدید لہر نے شہریوں کا جینا حرام کر رکھا ہےblochistan hot weather