افغانستان میں مزید امریکی فوجیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے، امریکی اعلیٰ کماندڑ

امریکی اعلیٰ کماندڑ
جنرل جان کیمپبل

افغانستان میں مزید امریکی فوجیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے، امریکی اعلیٰ کماندڑ
کابل، افغانستان(ڈی این ڈی): افغانستان میں تعینات امریکا اور مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کے اعلیٰ ترین کمانڈرجنرل جان کیمپبل نے کہا ہے کہ افغانستان میں مزید امریکی فوجیوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔
ایک اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے جنرل جان کیمپبل کا کہنا تھا کہ رواں سال کی دوسری ششماہی میں افغانستان میں سلامتی کی صورت حال نہ صرف مزید خراب ہوئی ہے بلکہ طالبان عسکریت پسندوں کے حملوں میں اضافہ بھی ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ عین ممکن ہے کہ افغانستان میں اگلے سال مزید امریکی فوجی تعینات کرنا پڑ جائیں۔
قبل ازیں امریکی فوجیوں کو واپس بلاتے ہوئے صدر باراک اوباما نے کہا تھا کہ وہاں صرف ایک ہزار امریکی فوجی تعینات رہیں گے لیکن رواں سال اکتوبر میں انہوں نے یہ اعلان کیا کہ 2016ء کے اختتام تک وہاں نو ہزار آٹھ سو فوجی تعینات رہیں گے۔
جنرل جان کیمپبل کا کہنا تھا کہ وہ امریکی صدر سے درخواست کریں گے کہ افغانستان میں ابھی تک موجود امریکا کے تقریبا دس ہزار فوجیوں کو جب تک ہو سکے وہیں تعینات رہنے دیا جائے۔ ساتھ ہی انہوں نے یہ اشارہ بھی دیا کہ وہ باراک اوباما سے یہ درخواست بھی کر سکتے ہیں کہ واشنگٹن افغانستان میں اپنے مزید بھی بھیجے۔

آذربائیجان کی کرنسی کی قدر میں مزید کمی؛حکومت نے اقتصادی صورتحال کی بہتری کے لئے منصوبہ تیار کر لیا

پارلیمنٹ کے ا سپیکراوگتے اسادوو
پارلیمنٹ کے ا سپیکراوگتے اسادوو

آذربائیجان کی کرنسی کی قدر میں مزید کمی؛حکومت نے اقتصادی صورتحال کی بہتری کے لئے منصوبہ تیار کر لیا
باکو، آذربائیجان(ڈی این ڈی): بین الاقوامی منڈی میں تیل کی قیمتوں کے گرنے کے بعد آذر بائیجان کی کرنسی منات کی قدر میں ڈالر کی مقابلے میں مزید کمی واقع ہو گئی ہے جبکہ آذربائیجان کی پارلیمنٹ کے ا سپیکراوگتے اسادوو کا کہنا ہے کہ حکومت نے موجودہ بگڑی ہوئی اقتصادی صورتحال پر قابوپانے کے لئے اقدامات کو حتمی شکل دے دی ہے جنہیں جلد منظر عام پر لایا جائے گا۔
واضح رہے کہعالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے باعث آذربائیجان کے مرکز ی بینک نے منات کی قدرکو گرنے سے نہ بچانے کا فیصلہ کیا تھا جس کے بعد ایک ہفتے میں امریکی ڈالر کے مقابلے میں منات کی قدر میں 47فیصد کمی واقع ہوچکی ہے۔جس کے باعث مہنگائی کی شرح میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے اور عوام کو اشیائے خردونوش خریدنے میں شدید دشواری کا سامنا ہے۔
دوسری جانب حکومتی سطح پر بھی ملکی کرنسی کی قدر کے گرنے کے اثرات نمایاں ہو رہے ہیں اور حکومت کے لئے نا صرف موجودہ ترقیاتی منصوبوں کو جاری رکھنا مشکل ہو گیا ہے بلکہ حکومت نے اپنے سالانہ دفاعی بجٹ میں بھی 60فیصد سے زائد کمی کر دی ہے۔
تاہم آذربائیجان کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے امید ظاہر کی ہے کہ ملک جلد اس معاشی بحران سے نکل آئے گا اور حکومت نے اس سلسلے میں ایک منصوبہ تیار کر لیا ہے جس کے متعلق عوام کو جلد آگاہ کر دیا جائے گا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ قرضوں کے مسئلے کے حل کے لئے بھی ایک منصوبے کے تحت کوششیں کی جائیں گی۔
جبکہ اقتصادی ماہر اور غیر سرکاری ادارے اقتصادی تجزیہ کے انسٹی ٹیوٹ کے سربراہ محمد تلیبی نے حکومتی معاشی کارکردگی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور کہا ہے کہ موجودہ بحران متعلقہ حکام کی نااہلی کا ثبوت ہے اور اس کے دور س منفی اثرات مرتب ہو ں گے۔

پچاس سے زائد روسی کمپنیوں کا پاکستان میں براہ راست سرمایہ کاری کرنے پر دلچسپی کا اظہار

پچاس سے زائد روسی کمپنیوں کا پاکستان میں براہ راست سرمایہ کاری کرنے پر دلچسپی کا اظہار
یوری ایم کو زلوف

پچاس سے زائد روسی کمپنیوں کا پاکستان میں براہ راست سرمایہ کاری کرنے پر دلچسپی کا اظہار
فیصل آباد(ڈی این ڈی): روسی فیڈریشن کے تجارتی نمائندے یوری ایم کو زلوف نے کہا ہے کہ 50سے زائد روس سے تعلق رکھنے والے کمپنیاں پاکستان میں براہ راست سرمایہ کاری کرنے پر دلچسپی رکھتی ہیں۔
یہ بات انہوں نے منگل کے روز فیصل آباد چیمبر آف کامرس میں بزنس کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
یوری ایم کو زلوف کا کہنا تھا کہ پاکستان اور روس کے درمیان دوطرفہ تجارتی روابط میں اضافہ ہو رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ روسی کامیابی کے ساتھ کراچی لاہور گیس پائپ لائن منصوبے پر کام کر رہے ہیں جس سے دونوں ممالک کی کاروباری برادری کو ایک دوسرے کے مزید قریب لانے میں مدد مل رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ کراچی لاہور گیس پائپ لائن منصوبے سے دیگر روسی کمپنیوں کو حوصلہ افزائی ملی ہے کہ وہ اپنے پاکستانی ہم منصبوں کے ساتھ مشترکہ منصوبے شروع کرنے کے علاوہ دیگر منصوبوں میں بھی سرمایہ کاری کریں۔
ماضی میں پاکستان اور روس کے مابین تعلقات کے حوالے سے بات کرتے ہوئے روسی فیڈریشن کے تجارتی نمائندے کا کہنا تھا کہ کراچی سٹیل ملز پاک روس معاشی تعلقات کا طر ہ امتیاز تھا ۔مزید برآں روس پہلے ہی مظفر گڑھ اور گدو پاور سٹیشنوں کی تعمیر کر چکا تھااور یوں پاکستان کے توانائی سے متعلق مسائل کو حل کرنے میں اپنا کردا ر ادا کر رہاتھا۔
ان کا کہنا تھا کہ بہت سی روسی فرمز بھی پاکستان میں چھوٹے، درمیانے اور بڑے منصوبوں پر کام کرنے میں دلچسپی رکھتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ دونوں ممالک کی حکومتیں بڑے منصوبوں پر مشترکہ طور پر کام کریں گی جبکہ نجی سرمایہ کار مقامی تاجروں کے تعاون سے چھوٹے اور درمیانے درجے کے منصوبوں پر کام کر سکتے ہیں۔
یوری ایم کو زلوف نے کہا کہ بہت سی روسی فرمز بھی پاکستان میں تیل اور گیس کی تلاش کے منصوبوں میں دلچسپی رکھتی ہیں اور وہ اس سلسلے میں خواہش کو حقیقت کا روپ دینے کے لئے روسی سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی کریں گے۔
روس کی طرف سے بعض ممالک پر عائد معاشی پابندیوں کا حوالے دیتے ہوئے روسی فیڈریشن کے تجارتی نمائندے نے کہا کہ پاکستانی بر آمد کنند گان کو آگے بڑھ کر روسی منڈیوں میں بالخصوص ٹیکسٹائل مصنوعات کو بر آمد کر کے اس خلا کو پر کرنا چاہئے۔
اس سے پہلے فیصل آباد چیمبر آف کامرس کے صدر چوہدری محمد نواز نے اپنے خطاب میں کہا کہ 1948سے پاکستان اور روس کے مابین بہت اچھے معاشی اور سفارتی تعلقات ہیں۔انہوں نے کہا دونوں ممالک کے درمیان ٹیکسٹائل کے شعبے میں مشترکہ منصوبوں ، زراعت پر مبنی صنعت، لائیوسٹاک کی صنعت، لیدر کا سامان، تیل اور گیس، انفارمیشن ٹیکنالوجی اور سیاحت سمیت باہمی تجارتی تعلقات کو مزید وسعت دینے کے وسیع امکانات ہیں

آذربائیجان میں ابتر معاشی صورت حال، حکومت دفاعی بجٹ میں 60فیصد سے زائد کمی کرنے پر مجبور

آذربائیجان میں ابتر معاشی صورت حال، حکومت دفاعی بجٹ میں 60فیصد سے زائد کمی کرنے پر مجبور

آذربائیجان میں ابتر معاشی صورت حال، حکومت دفاعی بجٹ میں 60فیصد سے زائد کمی کرنے پر مجبور
باکو، آذربائیجان(ڈی این ڈی): گزشتہ عرصے میں بین الاقوامی منڈی میں تیل کی قیمتوں کے گرنے اور آذربائیجان کی کرنسی کی قدر میں تیزی کے ساتھ نمایاں کمی نے وسطی ایشیائی ریاست کی معاشی ترقی میں جمود کی سی کیفیت پید ا کر دی ہے اور نتیجتا حکومت نے اپنے سالانہ دفاعی بجٹ میں 60فیصد سے زائد کمی کا فیصلہ کیا ہے۔
ڈسپیچ نیوز ڈیسک (ڈی این ڈی) نیوز ایجنسی کے مطابق عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے باعث آذربائیجان کے مرکز ی بینک نے ملکی کرنسی ’منات ‘ کی قدرکو گرنے سے نہ روکنے کا فیصلہ کیا تھا جس کے بعد ایک ہفتے میں ہی ڈالر کے مقابلے میں منات کی قدر میں 32فیصد کمی واقع ہوئی۔بینک کا کہنا تھا کہ کرنسی کو بچانے کی کوششوں میں اس نے اپنے آدھے سے زیادہ غیر ملکی ذخائر کو کھو دیا تھا۔
بین الاقوامی منڈی میں تیل کی قیمتوں کے گرنے اور اورامریکی ڈالر کے مقابلے میں ملکی کرنسی کی قدر میں کمی نے تیل کی دولت سے مالا مال آذربائیجان کی حکومت کے لئے بہت مشکل کر دیا ہے کہ وہ اپنے ترقیاتی منصوبوں کو جاری رکھ سکیں۔جس کے بعد حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں مجموعی اخراجات میں 23فیصد کمی کا فیصلہ کیا ہے جبکہ گزشتہ سالوں میں دفاعی شعبے میں 3ارب ڈالر سے زائد رقم خرچ کرنے کے برعکس، آئندہ سال دفاع اور سیکورٹی پر صرف 1.2ارب ڈالر خرچ کئے جائیں گے۔
واضح رہے کہ چار سال قبل آذربائیجان کی حکومت نے اعلان کیا تھا کہ اس کے سالانہ دفاعی اخراجات ہمسایہ ملک آرمینیا کے کل بجٹ جو کہ تقریبا 3ارب ڈالر تھا سے تجاوز کر گئے ہیں۔آذربائیجان کی موجودہ گرتی ہوئی معاشی صورت حال نے گزشتہ ایک دہائی کے عرصے میں کئے گئے بڑے پیمانے پر فوجی اضافے کو روک دیا ہے جس نے باکو کے اندر ایک امید پیدا کر دی تھی کہ وہ اس کی بدولت نگورنو کاراباخ اور دوسرے آرمینیا کے زیر کنٹرول علاقوں کو واپس حاصل کر لے گا۔

نگرہارمیں افغان فضائیہ کی کارروائی میں 38 داعش ہلاک

نگرہارمیں افغان فضائیہ کی کارروائی میں 38 داعش ہلاک
نگرہارمیں افغان فضائیہ کی کارروائی میں 38 داعش ہلاک

نگرہارمیں افغان فضائیہ کی کارروائی میں 38 داعش ہلاک

کابل ۔ (ڈی این ڈی) ننگرہارمیں افغان فضائیہ کی کارروائی میں 38 داعش ہلاک ۔ مشرقی افغانستان میں افغان فضائیہ کی کاروائی میں 38شدت پسند ہلاک ہوگئے ،۔افغان میڈیا کے مطابق ننگرہارکے ضلع آچین کے گورنر حاجی گلاب مجاہد نے بتایا کہ گزشتہ روز افغان فضائیہ نے داعش اور دیگر انتہاپسندوں کے اجتماع کو نشانہ بنایا۔یہ اجتماع آچین کے علاقہ میں ہورہا تھا۔انہوں نے کہا بمباری کے نتیجے میں ہلاکتیں ہوئی ہیں تاہم ان کی تفصیلات معلوم نہ ہوسکیں۔کابل میں افغان وزارت دفاع کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہاگہاہے کہ ننگرہار کے علاقہ سلیمان خیل میں فضائیہ کی ایک کاروائی میں 38شدت پسند ہلاک ہوگئے ہیں۔بیان میں اس حوالے سے مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئی ہیں۔دریں اثناء کابل میں نامعلوم افراد نے سابق افغان وزیردفاع جنرل رحیم وردگ کے بیٹے کو فائرنگ کرکے قتل کردیا۔حکام کے مطابق ڈاکٹر خالد کو کارتیسا میں ان کے گھر کے اندر فائرنگ کرکے ہلاک کردیا گیا۔ابھی تک وجہ قتل کے بارے میں معلوم نہ ہوسکا۔

جرمنی میں تارکین وطن اور مہاجرین کے بچوں کی تعلیم وتدریس کے لیے ساڑھے آٹھ ہزار نئے اساتذہ کی بھرتی

جرمنی میں تارکین وطن اور مہاجرین کے بچوں کی تعلیم وتدریس کے لیے ساڑھے آٹھ ہزار نئے اساتذہ کی بھرتی کا عمل مکمل

جرمنی میں تارکین وطن اور مہاجرین کے بچوں کی تعلیم وتدریس کے لیے ساڑھے آٹھ ہزار نئے اساتذہ کی بھرتی کا عمل مکمل
برلن ۔ (ڈی این ڈی) جرمنی نے تارکین وطن اور مہاجرین کے بچوں کی تعلیم وتدریس کے لیے ساڑھے آٹھ ہزار نئے اساتذہ کی بھرتی کا عمل مکمل کرلیا ۔جرمن اخبار ڈائی ویلٹ میں شائع رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جنگ زدہ اور غربت کا شکار ممالک سے قریباً ایک لاکھ 96ہزار بچے اپنے والدین کے ہمراہ جرمنی میں آئے ہیں اور جرمن سکولوں میں داخل ہوئے ہیں۔ان کے لیے 8ہزار 264 خصوصی کلاسیں شروع کی گئی ہیں جن کے لیے ساڑھے آٹھ ہزار اضافی اساتذہ کو بھرتی کیا گیا ہے۔جرمن ایجوکیشن اتھارٹی کے مطابق دنیا کے دوسرے ممالک سے 2015ء کے دوران سوا تین لاکھ اسکول جانے کی عمر کے بچے اپنے والدین کے ہمراہ جرمنی میں پہنچے ہیں۔جرمنی کو 31 دسمبر تک دس لاکھ سے زیادہ پناہ گزینوں اور تارکینِ وطن کی آمد متوقع تھی۔یہ تعداد سال 2014ء سے 5 گنا زیادہ ہے اور اتنی زیادہ تعداد میں پناہ گزینوں کی آمد کے پیش نظر جرمن حکومت کے لیے ان تمام کو بنیادی خدمات ،تعلیم اور صحت کی سہولتیں مہیا کرنا مشکل ہورہا ہے۔ایجوکیشن اتھارٹی کے سربراہ برن ہیلڈ کرتھ کا کہنا ہے کہ اسکولز اور ایجوکیشن انتظامیہ کو پہلے کبھی اس طرح کے چیلنج کا سامنا نہیں ہوا ہے۔

ایران اوربھارت نے اقتصادی تعاون کے جامع سمجھوتے پر دستخط کردئیے

ایران اوربھارت نے اقتصادی تعاون کے جامع سمجھوتے پر دستخط کردئیے

ایران اوربھارت نے اقتصادی تعاون کے جامع سمجھوتے پر دستخط کردئیے
تہران ۔ (ڈی این ڈی) ایران اوربھارت نے اقتصادی تعاون کے جامع سمجھوتے پر دستخط کردئیے ۔ایرانی خبررساں ادارے کے مطابق گزشتہ روزنئی دہلی میں ایران کے وزیر خزانہ علی طیب نیا اوربھارت کی وزیر خارجہ سشما سوراج نے اقتصادی تعاون کے سمجھوتے پر دستخط کئے اس سمجھوتے میں دونوں فریقوں نے توانائی ، انفرا سٹرکچر، بنکینگ ، تجارت اور سیاحت جیسے شعبوں میں تعاون پر اتفاق کیا ہے۔ ایران کے وزیر خزانہ نے وطن واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس سمجھوتے پر دستخط، ایران اور ہندوستان کے درمیان اقتصادی تعاون کے فروغ کے میدان میں اہم قدم ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ہندوستان ایران کی چابہار بندرگاہ کی توسیع اور وسطی ایشیاء تک پہنچنے کے لئے ریلوے لائن بچھانے میں تعاون کا خواہش مند ہے۔ واضح رہے کہ ایران کے وزیر خزانہ علی طیب نیا ایک اعلی سطحی وفد کے ہمراہ جمعے کو نئی دہلی پہنچے تھے ۔ انھوں نے ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر خارجہ سشما سوراج سے بھی ملاقات کی اور باہمی ، علاقائی اور بین الاقوام تعلقات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔

امریکی پولیس نے رواں برس ایک ہزار شہریوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا :واشنگٹن پوسٹ

امریکی پولیس نے رواں برس ایک ہزار شہریوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا،واشنگٹن پوسٹ

امریکی پولیس نے رواں برس ایک ہزار شہریوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا،واشنگٹن پوسٹ
واشنگٹن ۔  امریکی پولیس نے رواں برس ایک ہزار شہریوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا ہے۔امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق سنہ 2015 میں امریکی پولیس کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک ہزار کے قریب شہری ہلاک ہوئے ۔رپورٹ کے مطابق پولیس کی فائرنگ میں ہلاک ہونے والوں میں سیاہ فاموں کا تناسب ان کی آباد ی کے مقابلے میں 40 فیصد کے برابر ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکی آبادی میں سیاہ فام افراد کی کل تعداد چھ فیصد ہے تاہم پولیس کی فائرنگ سے ہلاک افراد میں ان کی کل تعداد 40 فیصد بنتی ہے۔ واضح رہے کہ امریکا میں پولیس کے ہاتھوں سیاہ فاموں کے قتل کے واقعات کے خلاف مظاہرے بھی ہوتے رہے ہیں۔ سیاہ فام امریکیوں کا خیال ہے کہ ان کے ساتھ امریکی پولیس کا رویہ متعصبانہ ہے۔